February 22, 2024

قرآن کریم > آل عمران >surah 3 ayat 3

نَزَّلَ عَلَيْكَ الْكِتٰبَ بِالْحَقِّ مُصَدِّقًا لِّمَا بَيْنَ يَدَيْهِ وَاَنْزَلَ التَّوْرٰىةَ وَالْاِنْجِيْلَ 

اس نے تم پر وہ کتاب نازل کی ہے جو حق پر مشتمل ہے، جو اپنے سے پہلی کتابوں کی تصدیق کرتی ہے، اور اسی نے تورات اور انجیل اتاریں

 آیت  3:     نَزَّلَ عَلَیْکَ الْکِتٰبَ بِالْحَقِّ:  « اُس نے نازل فرمائی ہے آپ پر (اے  نبي)  یہ کتاب حق کے ساتھ»

            اُس اللہ نے جس کے سوا کوئی معبود نہیں‘ جو الْحَیُّ ہے‘  الْقَیُّوْمُ ہے۔ اس میں اس کلام کی عظمت کی طرف اشارہ ہو رہا ہے کہ جان لو یہ کلام کس کا ہے‘ کس نے اتارا ہے۔ اور یہاں نوٹ کیجیے ‘ لفظ نَزَّلَ آیا ہے‘ اَنْزَلَ نہیں آیا۔

             مُصَدِّقًا لِّمَا بَیْنَ یَدَیْہِ:  «یہ تصدیق کرتے ہوئے آئی ہے اُس کی جو اس کے سامنے موجود ہے»

            یعنی تورات اور انجیل کی جو اس سے پہلے نازل ہو چکی ہیں۔ قرآن حکیم سابقہ ُکتب ِسماویہ کی دو اعتبارات سے تصدیق کرتا ہے۔ ایک یہ کہ وہ اللہ کی کتابیں تھیں جن میں تحریف ہو گئی۔ دوسرے یہ کہ قرآن اور محمدٌ رسول اللہ  ان پیشین گوئیوں کا مصداق بن کر آئے ہیں جو اُن کتابوں میں موجود تھیں۔

             وَاَنْزَلَ التَّوْراۃَ وَالْاِنْجِیْلَ :  «اور اُس نے تورات اور انجیل نازل فرمائی تھیں۔» 

UP
X
<>