April 13, 2021

قرآن کریم > ق >sorah 50 ayat 2

بَلْ عَجِبُوا أَن جَاءهُمْ مُنذِرٌ مِّنْهُمْ فَقَالَ الْكَافِرُونَ هَذَا شَيْءٌ عَجِيبٌ

بلکہ انہوں نے اس بات پر حیرت کا اظہار کیا ہے کہ کوئی (آخرت سے) ڈرانے وال خود اُنہی میں سے (کیسے) آگیا، چنانچہ ان کافروں نے یہ کہا ہے کہ : ’’ یہ تو بڑی عجیب بات ہے

آيت 2: بَلْ عَجِبُوا أَنْ جَاءَهُمْ مُنْذِرٌ مِنْهُمْ:  «بلكه انهيں بهت عجيب محسوس هوا هے كه ان كے پاس آيا هے ايك خبردار كرنے والا ان هى ميں سے».

منذر كے معنى هيں: انذار كرنے والا، خبردار (warn) كرنے والا.

فَقَالَ الْكَافِرُونَ هَذَا شَيْءٌ عَجِيبٌ:  «تو كافروں نے كها: يه تو بڑى عجيب سى بات هے».

UP
X
<>