April 10, 2021

قرآن کریم > الروم >sorah 30 ayat 7

يَعْلَمُونَ ظَاهِرًا مِّنَ الْحَيَاةِ الدُّنْيَا وَهُمْ عَنِ الآخِرَةِ هُمْ غَافِلُونَ

وہ دُنیوی زندگی کے صرف ظاہر رُخ کو جانتے ہیں ، اور آخرت کے بارے میں اُن کا حال یہ ہے کہ وہ اُس سے بالکل غافل ہیں

آیت ۷   یَعْلَمُوْنَ ظَاہِرًا مِّنَ الْحَیٰوۃِ الدُّنْیَا: ’’یہ لوگ دنیا کی زندگی کے بھی صرف ظاہر کو جانتے ہیں ۔‘‘

      یہاں سے موضوع ’’التذکیر بآلاء اللّٰہ‘‘ (اللہ کی نعمتوں کے حوالے سے نصیحت اور یاددہانی) کی طرف موڑا جا رہا ہے اور اس مضمون کے اعتبار سے سورۃ الروم اور سورۃ النحل میں بہت گہری مشابہت پائی جاتی ہے۔

        وَہُمْ عَنِ الْاٰخِرَۃِ ہُمْ غٰفِلُوْنَ: ’’اور وہ آخرت سے بالکل ہی غافل ہیں ۔‘‘

      یہ دنیا تو آخرت کی کھیتی ہے، لیکن یہ لوگ دنیا کی اس حقیقت کو بالکل فراموش کیے بیٹھے ہیں ۔ انہیں یاد ہی نہیں کہ آج وہ یہاں جو بوئیں گے کل آخرت میں وہی کچھ انہیں کاٹنا ہو گا۔ ان کے سامنے دُنیوی زندگی کا صرف یہی پہلو رہ گیا ہے کہ کھاؤ پیؤ اورعیش کرو، جبکہ آخرت کی زندگی کا تصور ان کے ذہنوں سے بالکل ہی اوجھل ہو گیا ہے۔ 

UP
X
<>